کینیڈا ، 13 لاکھ بچے غربت کی زندگی گزار رہے ہیں

اوٹاوا (شِنہوا) کینیڈا  میں 13 لاکھ سے زائد  یا 17.7 فیصد کینیڈین  بچے غربت کی زندگی گزار رہے ہیں۔

کمپین   2000 کی جانب سے  جاری کردہ سالانہ رپورٹ کے مطابق یہ ان بچوں کی ایک بہت بڑی تعداد ہے جو کھانے کی کمی کے نقصانات اور اثرات سے دوچار ہیں، ان کے پاس مناسب  قسم کے کپڑے موجود نہیں ہیں اور  ان کے والدین کافی  زیادہ گھنٹے کام کرتے ہیں۔

اس رپورٹ میں 2019 سے دستیاب تازہ ترین اعداد و شمار کو کام میں لاتے  ہوئے آمدنی، صحت اور سماجی عدم مساوات اور بچوں اور خاندانی غربت کی گہری ہوتی ہوئی سطح کے اجاڑ منظر کی تصویر کشی کی گئی  ہے۔

ان اعداد و شمار  کے مطابق غربت کے خاتمے  کے عمل  میں کمی آئی ہے اور کینیڈا کے کچھ حصوں میں غربت میں اضافہ ہوا ہے، درحقیقت بچے  گہری ہوتی ہوئی غربت میں زندگی گزار رہے ہیں۔

اس رپورٹ سے معلوم ہوا ہے کہ  نظام کی  رکاوٹوں کی وجہ سے پسماندہ برادریوں میں  زندگی گزارنے والے بچوں میں غربت کی غیر متناسب شرح پائی جاتی ہے۔

کینیڈا میں بچوں کی غربت کی سب سے زیادہ شرح نوناوت کے علاقے میں ہے جو کہ  34.4 فیصد ہے، مانیٹوبا صوبہ میں  28.4 فیصد کی یہ  شرح کسی بھی صوبے میں سب سے زیادہ ہے۔

اس رپورٹ میں کینیڈا کی حکومت پر زور دیا گیا ہے کہ وہ بچوں کے تحفظ کے لیے مزید جرات مندانہ اور فیصلہ کن اقدام کرے۔

یہ رپورٹ حال ہی میں دستیاب ٹیکس ڈیٹا پر مبنی ہےجس کا تعلق سال  2019 سے ہے۔