چینی تجربے اور دانشمندی کا عالمی غربت کے خاتمے کی کوششوں میں حصہ

لاؤس ، وینتیانے میں ایک طالب علم بان نونگ وینگ پرائمری اسکول میں چائنہ فاؤنڈیشن برائے غربت کے خاتمہ سے پانڈا پیک وصول کر رہا ہے۔(شِنہوا)

بیجنگ (شِنہوا) 17 اکتوبر اقوام متحدہ کی طرف سے غربت کے خاتمے کے عالمی دن کے ساتھ ساتھ چین کا قومی غربت سے نجات کا دن ہے۔

40 سال قبل اصلاحات اور کھلے پن کے آغاز کے بعد سے ، چین نے 77کروڑ دیہی باشندوں کو غربت سے نکال دیا ہے، جو عالمی بینک کی بین الاقوامی غربت کی لکیر پر مبنی عالمی مجموعے کا 70 فیصد سے ز ائد ہے۔

چین کی غربت سے نجات کی کامیابیوں نے نہ صرف اس کے اپنے لوگوں کو فائدہ پہنچایا بلکہ انسانیت کے لیے غربت کے خاتمے بارے عالمی کوششوں میں بھی اہم کردار ادا کیا  ہے اور ملک نے ٹھوس اقدامات کیے، اس کے ساتھ ملک نے غربت میں کمی کی عالمی کوششوں میں شراکت کے لیے اپنے تجربے اور دانشمندی کا اشتراک کیا ہے۔

کینیا، ٹرین ڈرائیور کونسیلیا ، وینڈی ، کیرولین (بائیں سے دائیں)نیروبی میں تربیت کے دوران اپنے چینی انسٹرکٹر ژانگ چھنگ کے ساتھ آپریٹنگ طریقہ کار پر عمل کررہے ہیں۔(شِنہوا)
گھانا، مشرقی علاقے کے گیوتسے گاؤں میں بچے نلکے سے پانی بھر رہے ہیں۔(شِنہوا)
کمبوڈیا ، نوم پنہ کے ضلع پریک پنوو میں ٹریپینگ تھلان ولیج کمیونٹی پری اسکول میں ایک بچی چین کے عطیہ کردہ پانی کے فلٹر بیرل سے اپنی پلاسٹک کی بوتل پینے کے پانی سے بھررہی ہے۔(شِنہوا)
کمبوڈیا ،کیمپونگ چام کے کیمپونگ چم صوبائی ہسپتال میں سم مائل موتیا کے آپریشن سے قبل اپنی بیٹی سے بوسہ لے رہی ہے۔(شِنہوا)
موزمبیق، صوبہ غزہ میں وانباؤ چاول کے کھیت میں ایک کٹائی کرنے والے کو دکھایا گیا ہے۔(شِنہوا)
کیوبا ، دارالحکومت ہوانا میں چینی ویگنز کی جا نب سے مکمل طور پر تیار کر دہ ٹرین میں مسا فر دیکھے جا سکتے ہیں۔(شِنہوا)