چین کا جاپان سے تائیوان کے امور پر اپنے وعدوں کی پاسداری کرنے کا مطالبہ

بیجنگ (شِنہوا) چین نے  جاپانی وزیراعظم یوشی ہائید سوگا کی جانب سے تائیوان کو ایک ملک کہنے پر سخت عدم اطمینان کا اظہاراور اس معاملے کو جاپان کے ساتھ اٹھایا ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان وانگ وین بن نے جمعرات کو روزانہ کی نیوز بریفنگ میں بتایا کہ جاپانی رہنما نے کھل کر تائیوان کو ایک ملک کہا جو چین- جاپان مشترکہ اعلامیہ سمیت چار سیاسی دستاویزات کے اصولوں کی  سنگین خلاف ورزی اور جاپان کی جانب سے متعدد بارکئے گئے اس وعدہ کی بھی خلاف ورزی ہے کہ وہ تائیوان کو ایک ملک قرار نہیں دیتا۔

ترجمان نے کہا کہ چین چاہتا ہے کہ جاپان فوری طور پر اس نقصان کو ختم کرنے کے لئے وضاحت جاری کرے اور اس بات کو یقینی بنائے کہ اس طرح کی چیز دوبارہ نہیں ہوگی۔

وانگ نے کہا کہ  دنیا میں صرف ایک چین ہے اور تائیوان چینی سرزمین کا اٹوٹ انگ ہے اور یہ کہ تائیوان کا مسئلہ چین اور جاپان کے تعلقات کی سیاسی بنیاد،دونوں ممالک کے مابین بنیادی ساکھ اور قانون وانصاف کی بین الاقوامی انصاف اور قانون کی عملداری سے متعلق ہے۔