چین کی کم عمر بچوں کے جرائم سے نمٹنے کیلئے بچوں کے عدالتی تحفظ کی جانب پیشرفت

چین کے شمال مشرقی صوبہ حئی لونگ جیانگ کے موہی میں لوگوہی گاؤں پولیس اسٹیشن کی شاخ کے سامنے پولیس افسر شی شیان چھیانگ سلیوٹ کررہے ہیں۔(شِنہوا)

بیجنگ(شِنہوا)چین نے کم عمر بچوں کے جرائم سے نمٹنے کے دوران ان کے عدالتی تحفظ میں بہتری کیلئے پیش رفت کی ہے۔

سپریم عوامی استغاثہ(ایس پی پی) کے مطابق 2021کی پہلی سہ ماہی میں چینی استغاثہ نے 5ہزار875کم عمر مشتبہ مجرموں کو گرفتار کرنے کی منظوری دی جبکہ 4ہزار448ایسے مشتبہ کو گرفتار کئے بغیر نرمی دینے کی منظوری دی۔

اسی عرصہ کے دوران چین میں فوجداری کیسز میں 6ہزار638 کم عمر مشتبہ ملزمان کیخلاف قانونی کارروائی دیکھی گئی،اس کے علاوہ 3ہزار674 کم عمر مشتبہ مجرموں کیخلاف کیس واپس لینے کی منظوری دی گئی۔

سپریم عوامی استغاثہ کے ایک عہدیدار شین گوجُن نے کہا کہ اعدادوشمار سے پتہ چلتا ہے کہ استغاثہ کم عمر ملزمان کی گرفتاری کی منظوری دینے میں محتاط ہے اور ان کے مقدمات نمٹانے میں سزا پر تعلیم کو ترجیح دی۔

سپریم عوامی استغاثہ نے مزید کہا کہ چینی استغاثہ نے جنوری سے مارچ تک بچوں کیخلاف جرم کرنے پر 9ہزار83 افراد کو گرفتار کیا ایسے مشتبہ جرا ئم  پر 11ہزار538کیخلاف قانونی کارروائی کی۔