بائیڈن فرانس اور جرمنی میں امریکی ساکھ بحال کرنے میں ناکام رہے:سروے

واشنگٹن (شِنہوا) ایک حالیہ سروے میں انکشاف ہوا ہے کہ فرانس اور جرمنی میں سب سے بااثرطاقت ہونے کی امریکی ساکھ  وبا سے پہلے کے مقابلے میں کم ہوئی ہے۔

جرمن مارشل فنڈ اور برٹیلسمن فاؤنڈیشن کے شائع ہونے والے سروے کے مطابق صدر جو بائیڈن کے دور میں بیرون ملک امریکی اثرو رسوخ بارے پایا جانے والا تصورگذشتہ سال کے نتائج کے مطابق ہے، جو وبا سے پہلے کی سطح سے 10 پوائنٹس کم ہوچکاتھا۔

اوقیانوس کے پار11ممالک میں کی گئی اس تحقیق کے مشاہدہ کے مطابق بائیڈن انتظامیہ کے ابتدائی تین مہینوں میں دنیا میں امریکی اثر و رسوخ کےحوالے سے فرانسیسیوں اور جرمن  کے خیالات متاثر نہیں ہوئے۔اور ایک تہائی سے لے کر  نصف تعداد تک اب امریکہ کو ایک اہم عالمی طاقت نہیں سمجھتے۔

دریں اثنا ، سروے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ نوجوان جواب دہندگان میں چین کے اثر و رسوخ کو زیادہ مثبت طور پر دیکھا گیاہے۔