چینی نائب وزیراعظم کا نۓ چینی قمری سال کے سفری رش کے دوران وباءپر قابو پانے پر زور

چین کے شمال مشرقی صوبہ لیاؤننگ کے شین یانگ میں شمالی شین یانگ ریلوے اسٹیشن پر ایک بچہ فوشنگ ٹرین میں روانگی کے لئے تیاری کررہا ہے۔(شِنہوا)

بیجنگ(شِنہوا) چینی نائب وزیر اعظم لیو ہی نے آئندہ نۓ چینی قمری سال کے سفری رش کے دوران نوول کرونا وائرس وباء کے پھیلاؤ کو روکنے اور اس پر قابو پانے کی کوششوں کے لئے زور دیاہے۔

لیو نے بیجنگ میں سفری رش کے لئے تیاری کے کام کا معائنہ کرتے ہوئے کہا کہ حکام وباء کی روک تھام اور کنٹرول کو اولین ترجیح بنائیں، تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ سفری رش کےچوٹی کے سیزن میں وبائی مرض کا پھیلاؤ نہ ہوسکے۔

لیو نے محکمہ ٹرانسپورٹ اور کمپنیوں کو اپنے فرائض کی انجام دہی پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس وباء کی وجہ سے مسافروں کی مجموعی تعداد میں رواں سال کمی کا امکان ہے، تاہم وبائی مرض پر قابو پانے کا کام تنظیمی کاموں کی دشواری کو مزید بڑھا دے گا۔

انہوں نے خدمات میں بہتری مثلاً صحت کیوآرکوڈز کے استعمال اور سفری کارکردگی کو موثر بنانے کے ساتھ ساتھ بزرگ افراد کے سفری تجربے کو بہتر بنانے کے اقدامات پر زور دیا۔

موسم بہارتہوار کا سفری رش، جو دنیا کی سب سے بڑی سالانہ انسانی ہجرت کے نام سے مشہور ہے،اس سال 28 جنوری سے8مارچ تک40 دن جاری رہے گا۔