جنوبی کوریا کے باشندوں کا صدارتی دفتر کے قریب تھاڈ کے خلاف احتجاج

گلوبل لنک | جنوبی کوریا کے باشندوں کا صدارتی دفتر کے قریب تھاڈ کے خلاف احتجاج

جنوبی کوریا کے رہائشیوں اور امن پسند کارکنوں نے جمعرات کے روز مرکزی سیول میں صدارتی دفتر کے قریب ریلی نکالی جس کا مقصد ملک میں امریکی ٹرمینل ہائی ایلٹیٹیوڈ ایریا ڈیفنس (تھاڈ) کی تنصیب کے خلاف احتجاج کرنا تھا۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ امریکی میزائل شیلڈ نظام کی تنصیب کے تمام طریقہ کار خلاف معمول اور غیر قانونی ہیں، جس کی تتنصیب کا فیصلہ رہائشیوں اور پارلیمنٹ کی رضامندی کے بغیر، ماحولیاتی اثرات کی جانچ کیے بغیر، اور آپریشن اور سائٹ کی تعمیر عارضی تعیناتی کے نام پر جاری ہے۔

صدر یون سک-یعول کی حکومت، جس نے 10 مئی کو عہدہ سنبھالا تھا، انہوں نے تھاڈ کی تعیناتی کی جگہ کو معمول پر لانے کا کام تیز کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مظاہرین کا کہنا تھا کہ معمول کے نام پر تھاڈ کی باقاعدہ تنصیب جزیرہ نما کوریا اور شمال مشرقی ایشیا میں رہائشیوں کی روزمرہ کی زندگی اور امن کو تباہ کر دے گی۔

انہوں نے صحت کے مسائل کے بارے میں بھی خبردار کیا جو تھاڈ کی تنصیب کے نتیجے میں ہو سکتے ہیں کیونکہ تھاڈ ایکس بینڈ ریڈار کے قریب ترین گاؤں میں رہنے والے تقریباً 100 رہائشیوں میں سے نو رہائشی پچھلے دو سالوں میں کینسر میں مبتلا ہوئے ہیں۔