چین ، جائیداد میں سرمایہ کاری میں 2.7 فیصد کمی

چین، مشرقی صوبہ ژے جیانگ کے دارالحکومت ہانگ ژو میں ر یئل اسٹیٹ منصوبہ(شِنہوا)

بیجنگ(شِنہوا) چین میں جائیداد کی پیشرفت بارے کی گئی  سرمایہ کاری میں2022 کے پہلے چار ماہ کے دوران  گزشتہ سال کی نسبت 2.7 فیصد کمی ہوئی ہے، جبکہ  اس کے مقابلے میں  پہلی سہ ماہی میں 0.7 فیصد  اضافہ ہوا ہے۔

قومی ادارہ شماریات کے مطابق  اس عرصے کے دوران  جائیداد میں کی گئی کل سرمایہ کاری 39.2 کھرب  یوآن(تقریباً578 ارب امریکی  ڈالرز )رہی۔

رہائشی عمارتوں میں  سرمایہ کاری گزشتہ سال کی نسبت 2.1 فیصد کمی کے ساتھ  29.5 کھرب یو آن  رہی ۔

زمینی رقبہ کے لحاظ سے   تجارتی مکانوں کی کل   فروخت پہلے چار ماہ   میں گزشتہ سال کی نسبت 20.9 فیصد کمی کے ساتھ  39 کروڑ 76 لاکھ 80 ہزار مر بع میٹرز رہی ۔

قدر کے لحاظ سے  تجارتی مکانوں کی فروخت چار ماہ کے عرصے میں  29.5 فیصد کمی کے ساتھ 37.8  کھرب یو آن  رہی ۔

قومی ادارہ شماریات کا مرتب کردہ  پراپرٹی ڈویلپمنٹ کلائمیٹ  انڈیکس  اپریل میں 95.89 پوائنٹس رہا۔

چین کے مالیاتی حکام نے کہا ہے کہ  پہلے- مکان کی خریداری  کے قرضوں پر شرح سود کی حد کو کم کیا جائے گا۔

مرکزی بینک کے مطابق  اس کا مقصد  اس بات کو تقویت پہنچانا ہے کہ  مکان  رہنے کے لئے ہے ، قیاس آرائیوں کے لئے نہیں۔اس کے ساتھ مقامی حالات پر مبنی  بہتر جائیداد پالیسیوں کی  حمایت کرنا اور ملکی پراپرٹی مارکیٹ کی صحت مندانہ ترقی  کو فروغ دینا ہے۔