چین کی نوول کرونا وائرس کے خلاف فتح نے ” تنگ نظر” مغربی ممالک کوشرمندگی سے دوچار کردیا ہے،امریکی اسکالر

چین کے شمال مغربی صوبہ شانشی کے شی آن میں ایک دوا ساز کمپنی میں عملہ عالمی وباء سے بچاؤ کے سامان کو جراثیم سے پاک کر رہا ہے۔(شِنہوا)

روم (شِنہوا) چین کی نوول کروناوائرس کی کامیابی امریکہ اور مغرب میں اس کے اتحادی ممالک کو شرمندہ کر رہی ہے۔

ایک امریکی اسکالر محقق  تاریخ دان ایرک زوسی نے ماڈرن ڈپلومیسی کی ویب سائٹ پر شائع ہونے والے ایک مضمون میں پیچیدہ بین الاقوامی مسائل کا جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ نوول کروناوائرس کے انفیکشن اور اموات کی شرح کو کم رکھنے میں چین کی کامیابی  کو ” تنگ نظر مغرب ” کے مقابلہ میں 100 گنا سے ہزار گنا کر دیا ہے-

انہوں نے کہاکہ چین کا نوول کروناوائرس  ٹیسٹنگ پروگرام وائرس کی منتقلی کو روکنے کے لیے اس کی کامیاب پالیسیوں کا "ایک اہم  حصہ” ہے۔

زوسی نے کہا کہ نوول کروناوائرس  کے خلاف جنگ میں چین کی کامیابی کے باوجود، مغرب "اس سے سبق نہیں سیکھنا چاہتا، کیونکہ مغرب کا نظریہ اس کے ذریعے انتہائی غلط ثابت ہو رہا ہے-