برازیل کے محققین نے سارس ۔ کوو۔ 2 کی 6 نسبوں کا پتہ لگا لیا

برازیل کے شہر ساؤ پولو میں ایک خاتون ایک پلے کارڈ کے پاس سے گزر رہی ہے جس پر تحریر ہے کہ "کورونا وائرس کے خلاف ہم سب ایک ہیں"(شِنہوا)

برازیلیا(شِنہوا) برازیل کے محققین نے ملک بھر میں پھیلنے والی بیماری کوویڈ۔19 کا سبب بنے والے وائرس سارس۔ کوو۔2 کے 6 نسبوں کا پتہ چلایا ہے ، یہ بات برازیل میں امراض کے ایک اہم تحقیقاتی مرکز نے کہی ۔

اوسوالڈو کروز فاؤنڈیشن نے اپنی سرکاری ویب سائٹ پر بتایا کہ محققین نے ایک وسیع جینیاتی مطالعہ کیا جس میں برازیل کے تمام خطوں کے مریضوں کے تقریباً 100 نمونے شامل تھے جنہیں 29 فروری سے 28 اپریل کے درمیان جمع کیا گیا تھا۔

اس تحقیق کی سربراہ پاؤلا کرسٹینا ریسینڈی نے کہا کہ مکمل وائرل جینوم کی ترتیب سے محققین کو یہ سمجھنے میں مدد مل سکتی ہے کہ نوول کرونا وائرس کس طرح ملک بھر میں پھیلتا ہے۔

ریسینڈی نے کہا کہ وائرل نسب کی خصوصیت سے ہمیں وائرس کی اس قسم کا پتہ چلتا ہے جو ایک مخصوص خطے میں گردش کر رہی ہو اور یہ ممالک اور یہاں تک کہ اس ملک میں گردش کرنیوالی نسبتوں کے ساتھ موازنہ کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔

ریسینڈی نے مزید کہا کہ جغرافیائی خطے میں نسب کے برتاؤ اور پھیلاؤ کو سمجھنے کےلئے یہ ایک اہم قدم ہے۔