طالبان کا افغان ضلع پر حملہ پسپا،13عسکریت پسند مارے گئے

قلعہ نو، افغانستان(شِنہوا)  افغانستان کے مغربی صوبہ بادغیس میں سرکاری فوج نے طالبان کا حملہ پسپا کرتے ہوئے جوابی کارروائی میں13 عسکریت پسندوں کو ہلاک کردیا،یہ بات ایک مقامی عہدیدار نے جمعرات کو بتائی۔

ضلعی گورنر محمد حیدر شریفی نے بتایا کہ طالبان باغیوں نے بدھ کی رات 9 بجے صوبے کے ضلع قادس کے ضلعی صدر مقام کے اطراف میں قائم سیکیورٹی چیک پوائنٹس پر کئی اطراف سے حملہ کیا۔

ضلعی گورنرنے بتایا کہ  سیکیورٹی فورسز نے فوری ردعمل کرتے ہوئے  جنگجووں کے خلاف زمینی اور فضائی کارروائی شروع کی جس کے نتیجے میں 13 باغی موقع پر مارے گئے جبکہ 16 دیگر زخمی ہوئے،جوابی کارروائی سے حملہ آوروں کو فرار ہونے پر مجبور کردیا گیا۔

عہدیدار نے مزید بتایا کہ ضلع قادس پر قبضے کی طالبان کی کوششیں ناکام بنادی گئی ہیں۔

 تاہم  تین گھنٹے تک جاری رہنے والی لڑائی میں دو فوجی ہلاک ، ایک زخمی اور دیگر تین کو جنگجووں نے اغوا کرلیا۔