جنوبی افغانستان میں مارٹر حملوں میں ہلاکتوں کی تعداد 25 ہو گئی

لشکر گاہ ، افغانستان (شِنہوا) افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند کے ایک مقامی بازار میں پیر کے روز ایک مارٹر گولہ گرنے اور اس کے بعد ہونے والے کار بم دھماکے میں 23 شہری اور دو طالبان عسکریت پسند ہلاک ہوگئے ، یہ بات صوبائی حکومت کے ترجمان نے بتائی۔

ترجمان عمر ژواک نے شِنہوا کو بتایا کہ طالبان عسکریت پسندوں نے مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے  9 بجے کے قریب صوبہ ہلمند کے ضلع سنگین میں ایک فوجی کیمپ پر مارٹر گولے فائر کیے۔ مارٹروں کے متعدد گولے ہدف کی بجائے ایک مقامی بازار میں گرے۔

انہوں نے کہا کہ ایک مارٹر گولا ایک دکان میں کھڑی کار بم پر لگا جس سے دھماکہ ہوا،طالبان اس دکان کو کار بم بنانے کے لئے استعمال کرتے ہیں۔

شورش زدہ اس ضلع میں مارٹر گولوں اور دھماکے کے نتیجے میں کم از کم 15 شہری زخمی بھی ہوئے۔

ابتدائی اطلاعات میں بتایا گیا تھا کہ اس مہلک حملے میں 10 شہری ہلاک اور 15 زخمی ہوئے۔

 ژواک نے طالبان کے اس دعوے کی تردید کی ہے کہ مارٹر گولے افغان فوج کے جوانوں نے فائر کیے تھے۔