روس جوہری ہتھیاروں کے استعمال میں کبھی پہل نہیں کرےگا: ترجمان

19 دسمبر 2019 کو لی گئی فائل کی تصویر میں روس کے صدر ولادیمیر پوتن کی ماسکو ، روس میں سالانہ پریس کانفرنس میں کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف کو دکھایا گیا ہے۔ روسی میڈیا نے منگل کو بتایا کہ کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف کو کوڈ 19 پر معاہدہ کرنے کے بعد اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ (شِنہوا / ایجینی سینیٹسن)

ماسکو(شِنہوا)روس کبھی بھی جوہری ہتھیاروں کے استعمال میں پہل نہیں کرےگا ،یہ بات  کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف نے بدھ کے روز ملک کی نئی جاری کردہ جوہری روک تھام  کی پالیسی کے حوالے سے کہی۔

 پیسکوف نے روزانہ  کی بریفنگ میں بتایا کہ منگل کوسامنے  آنے والی اس پالیسی میں ان حالات کی وضاحت کی گئی ہے جن میں روس غیر ملکی جوہری حملوں کا جواب دے سکتا ہے۔

منگل کے روز روسی صدر ولادی میر پوٹن نے  ملک کی جوہری  روک تھام  کی ریاستی پالیسی کے بنیادی اصولوں کے حوالے سے  ایک حکم پر دستخط کیے۔ اس حکم کے مطابق  روسی فیڈریشن کسی ایسے ہی حملے کے جواب میں یا ریاست کے وجود کو خطرہ ہونے کی صورت میں جوہری  حملے شروع کرنے کا حق محفوظ  رکھتی ہے اور یہ کہ  مذکورہ  پالیسی فطرتی طور پر دفاعی ہے۔