چینی نائب وزیراعظم کا کرونا وائرس سے متاثرہ طبی کارکنان کے علاج کیلئے تمام تر وسائل بروئے کار لانے پر زور

چین کے وسطی صوبہ ہوبے میں ووہان کے فرسٹ ہسپتال میں نرس سن چن(بائیں) ساتھیوں کے ساتھ کرونا وائرس سے متاثر مریضوں کی بارے میں ڈاکٹروں کی ہدایات دیکھ رہی ہے۔ 22 فروری 2020 (شِنہوا)

ووہان(شِنہوا) چین کی نائب وزیراعظم سون چھون لان نے نوول کرونا وائرس سے متاثرہ طبی کارکنان کے علاج کے لئے ہر ممکن اقدامات پر زور دیا ہے۔

سون چھون لان جو کہ چینی کمیونسٹ پارٹی (سی پی سی ) کی سنٹرل کمیٹی کے پولیٹیکل بیورو کی رکن بھی ہیں صوبہ ہوبے میں وبائی مرض پر قابو پانے کیلئے مرکزی حکومت کی ٹیم کی سربراہی کررہی ہیں۔

منگل کے روز سی پی سی سنٹرل کمیٹی اور سٹیٹ کونسل کی جانب سے سون نے ویڈیو رابطوں کے ذریعے تھونگ جی ہسپتال،یونین ہسپتال اور چونگ نان ہسپتال کے وائرس سے متاثرہ طبی اہلکاروں کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے ان کی صحت کے حوالے سے معلومات حاصل کیں اور زور دیا کہ وہ اپنا بہترین خیال رکھیں۔

انہوں نےکہا کہ جن ہسپتالوں میں یہ زیرعلاج ہیں وہ اپنے بہترین طبی وسائل کا استعمال کرتے ہوئے ان مریض کارکنوں کے علاج کے لئے انتہائی احتیاط کے ساتھ علاج کی منصوبہ بندی کریں۔

سون نے کہا کہ جن کارکنوں کی حالت تشویشن ناک ہے ان کے لئے خصوصی علاج معالجے کی سہولت فراہم کی جائے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ متعلقہ حکام خاص طور پر صوبہ ہوبے اور شہر ووہان کی انتظامیہ وائرس سے متاثرہ طبی کارکنوں کے مسائل حل کرنے میں مدد فراہم کریں اور اس بات پر زور دیا کہ طبی کارکنوں کی ڈیوٹیوں میں ردوبدل کرتے ہوئے ان کے تحفظ کے لئے اقدامات اور ان کی مراعات میں اضافہ کیا جائے۔