سعودی عرب کا امریکہ کی جانب سے حوثیوں کو دہشت گرد قرار دینے کے فیصلے کا خیر مقدم

ریا ض (آئی این پی )سعودی عرب نے یمنی حوثیوں کے گروہ کو دہشتگرد تنظیم قرار دینے سے متعلق امریکہ کے فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔سعودی خبررساں ادارے ایس پی اے کے مطابق سعودی دفتر خارجہ نے بیان میں کہا کہ اس فیصلے سے حوثی دہشتگردوں اور ان کے حامیوں کی سرگرمیوں کو لگام لگے گی۔بیان میں کہا گیا کہ اس فیصلے کے باعث حوثیوں کے خطرات ختم ہوں گے جبکہ میزائلوں، ڈرونز، جدید طرز کے اسلحہ اور حربی کارروائی کی فنڈنگ بند ہوگی- حوثیوں کو یہ ہتھیار اور فنڈز یمنی عوام پر جبر و قہر ڈھانے، عالمی جہاز رانی کو مخدوش بنانے اور پڑوسی ملکوں کو دھمکانے کے لیے دیے جاتے رہے ہیں۔سعودی وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ حوثیوں کو دہشتگرد قرار دینے سے سیاسی کوششوں کی کامیابی میں مدد ملے گی جبکہ ایران کے حمایت یافتہ حوثی قائدین سیاسی مشاورت کی میز پر سنجیدہ مذاکرات کے لیے مجبور ہوں گے۔

وزارت خارجہ نے یمن کے لیے اقوام متحدہ کے ایلچی مارٹن گریوٹ کو مدد کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ مکمل سیاسی حل تک رسائی اور یمنی بحران ختم کرانے کے لیے پیش کردہ تجاویز کی حمایت کی جائے گی۔ دریں اثنا یمن کی آئینی حکومت نے حوثیوں کو دہشتگرد تنظیم قرار دینے کے امریکی فیصلے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ بالاخر ہمارا دیرینہ مطالبہ قبول کرلیا گیا۔ اس سے نہ صرف یہ کہ یمن بلکہ پورے خطے کا منظر نامہ بدلے گا۔ ادھر یمنی دفتر خارجہ نے بیان میں کہا کہ حوثی امریکہ کے اس فیصلے کے بجا طور پر مستحق ہیں۔حوثی نہ صرف یہ کہ اپنی دہشتگردانہ سرگرمیوں بلکہ کشمکش کا دورانیہ طویل سے طویل تر کرنے والی کارستانیوں کے باعث خارجی دہشتگرد تنظیم قرار دینے جانے کے حقدار ہیں۔ یمنی وزارت خارجہ نے مزید کہا کہ ایران نواز حوثی دنیا بھر میں بدترین انسانی المیے کے ذمہ دار ہیں۔
اس سے قبل امریکا نے یمن میں حکومت کیخلاف برسرپیکار حوثی باغیوں کو دہشت گرد گروپ قرار دینے کا فیصلہ کیا۔غیرملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے بیان میں کہا ہے کہ حوثی دہشت گردانہ، سرحد پار حملوں اور شہریوں کی ہلاکت میں ملوث ہیں جبکہ خطے کو غیرمستحکم کرنے کی کوششوں میں بھی شامل ہیں۔امریکی وزیر خارجہ نے حوثی باغیوں کے سربراہ عبدالمالک الحوثی سمیت 3 رہنمائوں کو دہشت گرد نامزد کیا ہے۔امریکی وزیر خارجہ کے بیان کے بعد حوثی باغیوں کو غیرملکی دہشت گرد گروپ قرار دینے کا اعلان آج ہی متوقع ہے۔ رپورٹس کے مطابق امریکا کی جانب سے حوثیوں کو ٹرمپ کی صدارت کے آخری روز 19 جنوری کو بلیک لسٹ قررا دیا جائے گا۔