آئی ای پی میں ڈیزاسٹر رسک ریڈکشن انٹرایکٹو سیشن کا انعقاد

اسلام آباد(آئی این پی ) انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرز اسلام آباد سنٹر کے زیر اہتمام گریجویٹ انجینئرز کے لئے بنیادی تعریف ، تصورات اور پروٹوکول پر مشتمل ڈیزاسٹر رسک ریڈکشن سے متعلق انٹرایکٹو سیشن منعقد ہوا۔ اس کا مقصد نوجوان انجنئیروں کو آفت کے خطرے سے متعلق بہتر انتظام کیلئے ان کے کردار اور ذمہ داریوں سے آگاہ کرنا اور مقامی وسائل کے ذریعہ خطرہ کو سنبھالنے کے لئے عوامی صلاحیت کو فروغ دینا تھا۔ اس پروگرام کا اہتمام سنٹر نے نوجوان انجینئرز کے لئے ان کے جاری پیشہ ورانہ ترقیاتی پروگرام (سی پی ڈی) کے ایک حصے کے طور پر کیا ۔ سابق ڈی جی نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی(این ڈی ایم اے) بریگیڈ (ر)نجینئر فیاض حسین شاہ ریسورس برسن تھے جنھوں نیتباہی کے خطرات کو کم کرنے یا اسے کم کرنے کے لئے اٹھائے جا نے والے اقدامات پر روشنی ڈالی ۔ سی پی ڈی کے کنوینرانجییئر احمد شمیم نے سیشن کا انعقاد کیا اور ساٹھ کے قریب انجینئرز سیشن میں شریک ہوئے۔ اس موقع پر چیئرمین انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرز اسلام آباد سنٹر ، سیکرٹری انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرز اسلام آباد سنٹر جی پی انجینئر حافظ ایم احسان الحق قاضی ،کیپٹن (ر)انجینئر نجم الدین اور چیئرمین بلڈنگ کمیٹی آئی ای پی پروفیسر ڈاکٹر شریف بھٹی بھی موجود تھے ۔ چیئرمین انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرز اسلام آباد سنٹر نے اعلان کیا کہ یہ مرکز مقامی یونیورسٹیوں کے تعاون سے شارٹ کورسز اور ورکشاپس کے انعقاد سے نوجوان انجینئروں کی صلاحیت پیدا کرنے کی سرگرمیوں میں اضافہ کرے گا۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ ملک کو قومی تعمیر کے لئے انجینئرنگ کے شعبے میں مصدقہ ماہرین کی ضرورت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نوجوان انجینئرز کو مخصوص شعبوں میں اپنی مہارت کو بہتر بنانے پر توجہ دینی چاہئے۔ بریگیڈ (ر)انجینئر فیاض حسین شاہ جو آفات سے نمٹنے کے مختلف شعبوں میں بھرپور تجربہ رکھتے ہیں کا خیال تھا کہ قدرتی اور جیو فزیکل دونوں آفات کو بہتر حکمت عملی اور منصوبہ بندی سے روکا جاسکتا ہے۔ اس سلسلے میں انہوں نے کچھ بیرونی ممالک کے مختلف مطالعات اور تجربات کا حوالہ دیا جنہوں نے آفات کو کامیابی کے ساتھ روکنے اور نقصانات پر قابو پانے کے لئے کیا ۔ انہوں نے تباہی کی روک تھام کیلئے فعال نقطہ نظر اپنانے اور خطرات کے اثرات کو کم کرنے پر زور دیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیلاب جیسی آفات سے ہونے والے نقصانات کو قومی اور عوامی سطح پر مضبوطی سے کم کیا جاسکتا ہے۔ شرکا میں سے کچھ نے اس موضوع پر گفتگو کرتے ہوئے مختلف قسم کی تباہی کا موثر جواب دینے کے لئے ضروری تیاری کی ضرورت پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ تباہ کاریوں کے خطرات سے نمٹنے کے لئے صلاحیت پیدا کرنے کے لئے آگاہی مہم کے ذریعے عوام کو متحرک کیا جانا چاہئے۔