احتساب عدالت نے پیراں غائب رینٹل پاور ریفرنس میں سابق وزیراعظم پرویز اشرف کو بری کر دیا نیب کارینٹل پاور کرپشن کیس کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان کردیا

اسلام آباد(آئی این پی)احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کو رینٹل پاور ریفرنس میں بری کر دیا ہے جبکہ نیب نے نیب نے رینٹل پاور کرپشن کیس کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان کردیا ہے۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے پیراں غائب رینٹل پاور ریفرنس میں راجہ پرویز اشرف اور دیگر ملزمان کی بریت کی درخواستوں پر محفوظ شدہ فیصلہ سناتے ہوئے راجہ پرویز اشرف سمیت آٹھ ملزمان کو ریفرنس میں بری کیا،دیگر ملزمان میں اسماعیل قریشی، شاہد رفیع، شوکت ترین، طاہر بشارت چیمہ ،محمد سلیم عارف،چوہدری عبدالقدیر اور اقبال علی شاہ شامل تھے۔راجہ پرویز اشرف کوگزشتہ ہفتے ساہیوال ریفرنس میں بھی بری کیا گیاتھا۔پیراں غائب ریفرنس نیب راولپنڈی کی جانب سے 2014 میں دائر کیا گیا ،192 میگا واٹ کا رینٹل پاور پلانٹ ملتان کے علاقے پیراں غائب میں لگایا گیا تھا منصوبے میں راجہ پرویز اشرف پر بطور وزیر پانی و بجلی کرپشن اور اختیارات کے غلط استعمال کا الزام تھا۔دوسری جانب نیب نے رینٹل پاور کرپشن کیس کا فیصلہ چیلنج کرنے کا اعلان کیا ہے۔نیب اعلامیہ کے مطابق راجہ پرویز اشرف سمیت تمام ملزمان کی بریت کو چیلنج کریں گے،نیب کے پاس تمام ملزمان کے خلاف شواہدموجود ہیں،عدالت سے استدعا کرینگے کہ ملزمان کی بریت کا حکم کالعدم قراردیا جائے۔