یوکرین کشیدگی’ امریکی صدر کی روسی ہم منصب پر ذاتی پابندیاں لگانے کی دھمکیاں

واشنگٹن/لندن/کیف/ ماسکو/ برلن (آئی این پی)امریکی صدر جو بائیڈن کا کہنا ہے کہ اگر روس نے یوکرین پر حملہ کیا تو وہ صدر ولادمیر پیوٹن پر ذاتی پابندیاں لگانے پر غور کریں گے۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق امریکی صدر جو بائیڈن نے ایک بار پھر روس کو خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر اس نے یوکرین پر حملہ کیا تو اس کے بہت سخت نتائج ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ یوکرین کی سرحد پر روس کے کسی بھی اقدام کو دوسری جنگ عظیم کے بعد سب سے بڑے حملے کے مترادف سمجھا جائے گا۔اس کے علاوہ برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے یورپی اتحادیوں پر زور دیا ہے کہ اگر روس یوکرین پر حملہ کرتا ہے تو اس پر پابندیاں لگائی جائیں۔ جبکہ ادھر جرمن چانسلر اولاف شولس نے کہا ہے کہ اب اس بات کا انحصار ماسکو پر ہے کہ وہ کشیدگی کم کرنے کی خاطر قدم اٹھائے۔ شولس کے بقول یوکرائن کے خلاف روسی جارحیت کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔ یورپی کمیشن کی سربراہ ارزولا فان ڈیئر لائن کے بقول ای یو روس کے خلاف وسیع تر پابنیدوں پر کام جاری رکھے ہوئے ہے۔دوسری جانب روس نے امریکا اور دیگر پر یوکرین کے معاملے پر تناؤ بڑھانے کا الزام لگاتے ہوئے یوکرین پر کسی بھی حملے کرنے کی تردید کی۔خیال رہے کہ روس نے یوکرین کی سرحدپر تقریباً ایک لاکھ فوجیوں کو تعینات کیا ہوا ہے لیکن حملے کی منصوبہ بندی سے انکار کیا ہے۔