نیویارک سٹیٹ اسمبلی کا الیکشن لڑنے والے ایرک سٹیون سن کی کامیابی کیلئے برونکس کی پاکستانی امریکن کمیونٹی سرگرم

نیویارک (خصوصی رپورٹ)نیویارک کے علاقے برونکس کے اسمبلی ڈسٹرکٹ79سے نیویارک سٹیٹ اسمبلی کا الیکشن لڑنے والے ایرک سٹیون سن کی کامیابی کے لئے برونکس کی پاکستانی امریکن کمیونٹی سرگرم ہو گئی ہے۔اس سلسلے میں پاکستانی امریکن کمیونٹی کی ایک اہم و نمائندہ تنظیم امریکن پاکستانی پبلک افئیرز کمیٹی (اے پی پیک ۔APPAC)وچئیرمین ڈاکٹر اعجاز احمد اور کمیونٹی کی سماجی شخصیت مرزا خاور بیگ کے اشتراک سے 23جون کو ہونیوالے پرائمری الیکشن میں ایرک سٹیون سن کی سپورٹ میں فنڈ ریزنگ ظہرانہ و استقبالیہ منعقد کیا گیا۔
مرزا خاور بیگ کی رہائشگاہ پر ڈاکٹر اعجاز احمد کی صدارت میں منعقدہ تقریب میں ایرک سٹیون سن نے خصوصی شرکت کی ، پاکستانی کمیونٹی کی جانب سے کی جانیوالی تائید و حمایت پر شکرئیہ ادا کرتے ہوئے یقین دلایا کہ سٹیٹ اسمبلی میں دوبارہ پہنچنے کی صورت میں وہ پاکستانی و مسلم کمیونٹی سمیت امیگرنٹ کمیونٹیز کی موثرآواز بنیں گے ۔


استقبالیہ میں پاکستانی امریکن کمیونٹی کی مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی اہم شخصیات پرویز ریاض،اسد چوہدری ، عامررزاق، عدیل شجاع گوندل ، ضمیر احمد چوہدری ، سجاول بیگ ، مرید حسین بھٹی ، ملک ظفر ، عامر بھوتھ ، علی بھوتھ ، صیام بٹ ، ثاقب خان ، محمد مالک ، خرم ملک ، راحیل، علی مسرور، علی چیمہ سمیت دیگر نے شرکت کی ۔تقریب کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے ہوا ، کمیونٹی رہنما عامر رزاق نے تلاوت کی سعادت حاصل کی ۔


تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ”اے پی پیک “ کے چئیرمین ڈاکٹر اعجاز احمد نے کہا کہ APPACتین سال قبل اس مقصد کو پیش نظر رکھتے ہوئے قائم کی گئی کہ پاکستانی امریکن کمیونٹی کو امریکی نظام کے قومی دھارے میں لایا جائے اور انہیں امریکی سیاست میں سرگرم عمل کیا جائے ۔ہماری کمیونٹی پاکستانی سیاست میں بہت سرگرم ہے لیکن ان کے لئے امریکہ ، وہ ملک کہ جہاں وہ رہتے ہیں ، کی سیاست میں بھی سرگرم عمل ہونا اور اپنی نمائندگی کو یقینی بنانا بہت ضروری ہے ۔جب آپ سیاست میں سرگرم عمل ہوتے ہیں تو آپ امریکی نظام کو حصہ بنتے ہیں اور جب آپ نظام کو حصہ بنتے ہیں تو آپ اپنی نمائندگی کے ساتھ ساتھ اس امر بھی یقینی بناتے ہیں کہ آپ خود یا آپ کے نمائندے منتخب ایوانوں میں آپ کی آواز بنیں ۔ڈاکٹراعجاز احمد نے مزید کہا کہ نیویارک سٹیٹ اسمبلی کےلئے ایرک سٹیون سن الیکشن لڑنے جا رہے ہیں اور پہلے سے منتخب اسمبلی مین فل راموس آئندہ ٹرم کے لئے الیکشن لڑررہے ہیں ۔ ہمیں دیکھنا ہے کہ ہم انہیں کیسے سپورٹ کر سکتے ہیں اور کیسے ان کی کامیابی میںمددگار ثابت ہو سکتے ہیں ۔ ہمیں یہ بھی دیکھنا ہے کہ منتخب ہونیوالے نمائندے ایوانوں میں جا کر ہمارے ایشوز کو کیسے سپورٹ کر سکتے ہیں ۔


ڈاکٹر اعجاز احمد نے کہا کہ کرونا امریکہ میں کرونا وائرس بحران آیا تو ہم نے دیکھا کہ پاکستانی کمیونٹی کی تنظیمیں ، قائدین اور ارکان بڑی تعداد میں مدد کے لئے باہر آگئے ۔سینکڑوں کی تعداد میں ہمارے لوگ باہر آئے جو ہزاروں نیویارکرز کو کھانا اور اشیاءخوردو نوش فراہم کررہے ہیں ۔ہمارے ڈاکٹر ، نرسز اور پیرا میڈیک ان کی بھی مدد کررہے ہیں کہ جنہیں طبی مدد کی ضرورت ہے۔ہماری کمیونٹی فرسٹ ریسپانڈرز اور فرسٹ لائینرز کی مدد میں صف اول میں نظر آئی اور مسلسل آرہی ہے ۔ہم اپنی استطاعت کے مطابق اپنا ہر ممکن کردارادا کررہے ہیں ۔
”اے پی پیک “ کے چئیرمین نے کہا کہ امریکہ ایک بڑے چیلنج سے نبرد آزما ہے ۔ملک بھر میں اس وقت بڑے پیمانے پر احتجاج اور مظاہرے ہو رہے ہیں ۔اس موقع پر ہم تمام اقلیتوں اور کمیونٹیز کے ساتھ کھڑے ہیں ۔پاکستانی و مسلم کمیونٹی کوسال ہا سال سے عدم مساوات، نا انصافی اور امتیازی سلوک جیسے روئیوں کا سامنا رہا ہے ۔ اس لئے آج کل جو ہو رہا ہے، یہ ہمارے لئے کوئی نیا نہیں ہے ۔اس لئے ہم ”بلیک لائیوز میٹرز“ کے ساتھ کھڑے ہیں اور چاہتے ہیں کہ انصاف کے نظام میں جہاں کوئی کمی ہے وہ دور کی جائے اور جہاں ضرورت ہے وہاں اصلاحات کی جائیں ۔سب کے حقوق کو یقینی بنانا چاہئیے اور حقوق کو یقینی بنانے کی کوئی بھی تحریک ہو ، ہم اس کے ساتھ کھڑے ہیں ۔
ایرک سٹیون سن نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ میں اپنے اسمبلی ڈسٹرکٹ میں بالخصوص اور امریکہ بھر میں بسنے والی پاکستانی امریکن کمیونٹی کی قابل قدر خدمات کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں ۔انہوں نے کہا کہ میں گواہ ہوں کہ آج سے کئی سال پہلے سمندری طوفان قطرینہ کی تباہ کاری کے بعد اور اب کرونا وائرس وبا کے دوران پاکستانی امریکن کمیونٹی جس طرح بلا امتیا ز خدمت خلق کررہی ہے ، اسے جتنا بھی سراہا جائے کم ہے ۔ یہ کام کمیونٹی کے کردارکی عکاسی کرتا ہے ۔امریکی عوام کو ان خدمات سے آگاہی ہونی چاہئیے ۔میں ان خدمات کا گواہ ہوں۔ پاکستانی کمیونٹی ، میں آپ کا شکرئیہ ادا کرتا ہوں ۔
ایرک سٹیون سن نے مزید کہا کہ میں جب سٹیٹ اسمبلی میں تھا تو میں نے نیویارک سٹیٹ میں ریاست بھر کے سکولوں میں موجود مسلم سٹوڈنٹس کے لئے حلال کھانوں کے بل کو سپانسر کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ میں یقین دلاتا ہوں کہ سٹیٹ اسمبلی میں دوبارہ پہنچنے کی صورت میں پاکستانی ،مسلم کمیونٹی کی آواز بنوں گا اور ان کے مسائل کے حل میں اپنا ہر ممکن کردار ادا کرونگا۔
مرزا خاور بیگ نے کہا کہ ہم ایرک سٹیون سن کو گذشتہ دس سے زائد سالوں سے جانتے ہیں ۔ وہ نیویارک سٹیٹ اسمبلی کے رکن رہ چکے ہیں ۔ ہمیں انہیں آزمانے کی ضرورت نہیں کیونکہ ہم نے ماضی میں انہیں اپنی کمیونٹی کو دوست اسمبلی مین پایا،مجھے یقین ہے کہ مسٹرسٹیونسن دوبارہ اسمبلی میں پہنچنے کے بعد ایک البنی میں ہماری آواز بنیں گے ۔انہوں نے کہا کہ برونکس میں پاکستانی کمیونٹی کی تعدادمیں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ اس لئے کمیونٹی کا مقامی سیاست اور سیاسی نظام میں حصہ لینا بہت ضروری ہے ۔ آئیے اس کام کا آغاز ایرک سٹیون سن کو سٹیٹ اسمبلی میں دوبارہ پہنچانے سے کریں ۔
پرویزریاض امرا ءنے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایرک سٹیون سن ، پاکستانی کمیونٹی کے دیرینہ سپورٹر ہیں ۔ ہمیں منتخب ایوانوں میں ایرک سٹیون سن اور ان جیسے بہت سے ساتھیوں کی ضرورت ہے جو کہ ایوان میں پہنچ کر کمیونٹی کی آواز بنیں۔انہوں نے کہا کہ ہماری کمیونٹی ایک عرصے سے سیاسی طور پر سرگرم عمل ہونے میں کوشاں تھی۔ ہماری کمیونٹی کی ایک حیثیت اور اہمیت ہے ۔ اس لئے ہمیں اپنے سیاسی کردار کو یقینی بنانا چاہئیے ۔
اسد چوہدری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں مسٹر سٹیونسن نے سیٹ اسمبلی میں حلال کھانوں کے بل کی منظوری میں اہم کردارادا کیا۔ ان کا البنی میں کمیونٹی کی سپورٹ کے حوالے سے ایک اچھا ریکارڈ موجود ہے۔ ہمیں ان کو سپورٹ کرنا چاہئیے کہ جو ہمارے ایشوز کا خیال رکھتے ہیں اور ان کے حل میں اپنا کردار ادا کرتے ہیں ۔
عدیل شجاع گوندل نے کہا کہ پاکستانی کمیونٹی کو یکجا ہو کر اور دوسری کمیونٹی کے ساتھ اتحاد بنا کر اپنے انفرادی اور اجتماعی ایشوز کے حل کو یقینی بنانا چاہئیے ۔ ہم مل کر کام کریں گے تو کامیابی کے امکانات زیادہ روشن ہونگے ۔ 23جون کے الیکشن بہت اہم ہیں ۔ کمیونٹی کو ہر ممکن حصہ لینا چاہئیے ۔
تقریب سے خطاب کے دوران ضمیر احمد چوہدری ، عامر رزاق چوہدری ، خرم ملک ، سجاول بیگ ، مرید حسین بھٹی ، ملک ظفر ، عامر بھوتھ ، علی بھوتھ ، صیام بٹ ، ثاقب خان ، محمد مالک ، خرم ملک ، راحیل، علی مسرور، علی چیمہ سمیت دیگر شرکاءنے ایرک سٹیون سن کو کمیونٹی کی جانب سے ہر ممکن سپورٹ کا یقین دلایا۔