فٹبال ورلڈ کپ، جاپانی ٹیم اور تماشائیوں نے صفائی کی اعلی مثال قائم کردی

ماسکو(آئی این پی) فٹبال ورلڈ کپ کے پری کوارٹر فائنل میچ میں جاپانی ٹیم کی بیلجیئم کے ہاتھوں 3-2سے شکست کے باوجود ٹیم اور تماشائیوں نے دنیا بھر میں تحمل اور صفائی کی اعلی مثال قائم کردی۔اسلام میں صفائی کو نصف ایمان قرار دیا گیا ہے لیکن ہمارے سیاحتی اور تفریحی مقامات پر گندگی و غلاظت کے ڈھیر ہی ڈھیر نظر آتے ہیں۔عید کی چھٹیوں کے بعد ملک بھر کے سیاحتی مقامات پر مقامی سیاحوں نے کچرا کچرا کردیا تھا لیکن دنیا میں ایک قوم ایسی بھی ہے جو اپنے ملک کے ساتھ ساتھ دیگر ممالک میں بھی صفائی کی اعلی مثال ہیں۔روس میں جاری فٹبال ورلڈکپ کے پری کوارٹر فائنل میچ میں جاپانی ٹیم کو بیلجئیم نے 2-3 سے شکست دی لیکن جاپانی ٹیم اور شائقین نے شکست کے باوجود مداحوں کے دل جیت لیے ہیں۔جاپان کی فٹبال ٹیم کے کھلاڑیوں نے شکست کے بعد نہ صرف ڈریسنگ روم کی خود صفائی کی بلکہ شکریہ کا پلے کارڈ بھی چھوڑ کر گئے۔میچ کے بعد جاپانی شائقین نے شکست پر دیگر ممالک کے شائقین کی طرح ہنگامہ آرائی کے بجائے پورے گرانڈ کی صفائی کی اور بڑے بڑے تھیلے پکڑ کر اسٹیڈیم سے کوڑا کرکٹ اٹھایا۔جاپانی ٹیم اور شائقین کے اس عمل نے دنیا بھر کے شائقین کے دل جیت لیے ہیں اور سوشل میڈیا پر اس عمل کو بے حد سراہا جارہا ہے۔خیال رہے کہ جاپان قوم اپنی نفاست اور صفائی کے حوالے سے پوری دنیا میں جانی پہچانی جاتی ہے اور جاپان کے اسکولوں میں روزانہ کی سطح پر بچے 10 منٹ تک اپنی کلاس و اسکول کی صفائی خود کرتے ہیں۔اکثر سنسنی خیز میچ کے بعد ہارنے والی ٹیموں کے فین گرانڈز میں بوتلیں پھینکتے ہیں اور کرسیوں کو نذر آتش کردیتے ہیں لیکن جاپانی شائقین کی جانب سے اسٹیڈیم کی صفائی کرنا قابل تقلید عمل ہے۔