یکہ توت خودکش حملہ ،21افراد جاں بحق ،75شدید زخمی

پشاور(آئی این پی ) یکہ توت خودکش حملے کے بعد شہر کی فضا سوگوار،کاروباری سرگرمیاں جزوی طور پر معطل ،خیبرپختونخوا بار کونسل نے واقعے پر تین روزہ سوگ کا اعلان کرتے ہوئے عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ کردیا جب کہ حملے میں شہید ہونے والے 20 میں سے 10 افراد کی اجتماعی نماز جنازہ اداکردی گئی۔ تفصیلات کے مطابق پشاور کے علاقے یکہ توت میں خود کش حملے کے بعد شہر کی فضا سوگوار ہے اور شہر کی کاروباری سرگرمیاں جزوی طور پر معطل ہیں جب کہخیبرپختونخوا بار کونسل نے بھی واقعے پر تین روزہ سوگ کا اعلان کرتے ہوئے آج عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ کردیا ہے جس کے باعث وکلا عدالتوں میں پیش نہیں ہوں گے۔ عوامی نیشنل پارٹی کی جانب سے سوگ کا اعلان بھی کیا گیا ہے۔دوسری جانب حملے میں شہید ہونے والے 20 میں سے 10 افراد کی اجتماعی نماز جنازہ رحمان بابا قبرستان میں ادا کردی گئی ہے علاوہ ازیں لیڈی ریڈنگ اسپتال انتظامیہ نے جاں بحق افراد کی فہرست جاری کردی ہے جس کے مطابق جاں بحق ہونیوالوں میں ہارون بلور کے علاوہ آصف خان، محمد شعیب، محمد نعیم، یاسین، حاجی محمد گل، نجیب اللہ، عابد اللہ، حذیفہ، عارف حسین، اخترگل، عمران، رضوان ضمیر خان، اسرار، ثمین، صادق اور خان محمد شامل ہیں۔ دھماکے میں جاں بحق افراد کی تعداد 21 ہوگئی۔ترجمان لیڈی ریڈنگ اسپتال کے مطابق خودکش دھماکے میں 75 افراد زخمی بھی ہوئے ہوئے ہیں۔لیڈی ریڈنگ اسپتال میں 20، جبکہ خیبر ٹیچنگ اسپتال میں 1 لاش لائی گئی ہے۔خودکش دھماکے میں اے این پی کے امیدوار ہارون بلور بھی شہید ہوئے۔ ہارون بلور صوبائی اسمبلی کے حلقہ پی کے 78 سے الیکشن میں حصہ لے رہے تھے۔بم ڈسپوزل اسکواڈ اور محکمہ انسداد دہشت گردی کے ایس پی کے مطابق دھماکہ خودکش تھا جس میں 10 سے 12 کلو بارود استعمال کیا گیا تھا