نواز شریف کو سزا،لاہور ہائیکورٹ نے سزائیں رکوانے کی درخواست کو مسترد کر کے شریف فیملی کو مزید پریشان کر دیا

لاہور(آئی این پی)لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم نوازشریف،مریم نواز اور کیپٹن(ر)صفدرکی سزاؤں کیخلاف درخواست اعتراض لگا کر مسترد کر دی جبکہ جسٹس عابد عزیز شیخ نے ریمارکس دئیے ہیں کہ آپ جس فیصلے کومعطل کراناچاہتے ہیں وہ کہاں ہے؟‘دیکھناپڑیگاکیافیصلہ نیب آرڈیننس 1999 کے دائرہ کارمیں آتاہے یانہیں؟ جبکہ عدالت نے درخواست گزارکوعدالتی فیصلہ درخواست کیساتھ لف کرنے کی ہدایت کر دی۔ تفصیلات کے مطابق ایون فیلڈ ریفرنس میں سزاؤ ں کیخلاف شریف فیملی کی درخواست پر سماعت لاہور ہائیکورٹ میں ہوئی۔ہائیکورٹ کے جسٹس عابدعزیز شیخ نے درخواست پرسماعت کی۔جسٹس عابدعزیز شیخ نے ریمارکس دیئے کہ آپ جس فیصلے کومعطل کراناچاہتے ہیں وہ کہاں ہے؟جس پر شریف فیملی کے وکلا نے عدالت میں درخواست جمع کرا دی اور موقف اپنا یا کہ نیب قانون 18ویں ترمیم کے بعدختم ہو چکا ہے ،عدالت نے ریمارکس دیئے کہ دیکھناپڑیگاکیافیصلہ نیب آرڈیننس 1999 کے دائرہ کارمیں آتاہے یانہیں؟عدالت نے احتساب عدالت کا فیصلہ ساتھ نہ ہونے کا اعتراض لگا کردرخواست مسترد کر دی اور درخواست گزارکوعدالتی فیصلہ درخواست کیساتھ لف کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ عدالتی فیصلہ ساتھ لف کر کے کل عدالت میں دوبارہ جمع کر اددیں۔لاہور ہائیکورٹ نے کیس کی سماعت (آج)تک کیلئے ملتوی کر دی۔