چین کے قمری تحقیقاتی مشن چھانگ ای-4 نے 29 ویں قمری دن کیلئے دوبارہ کام شروع کردیا

بیجنگ (شِنہوا)چین کے قمری تحقیقاتی مشن چھانگ ای-4 کے لینڈر اور روور نے چاند کے دور درازعلاقے میں 29 ویں قمری دن کے لئے دوبارہ کام شروع کردیا ہے۔

چین کے قومی خلائی انتظامی ادارے کے چاند کے تحقیقاتی اورخلائی پروگرام مرکز کے  مطابق لینڈر نے منگل کو بیجنگ ٹائم کے  مطابق رات 9 بج کر43 منٹ جبکہ روور،یوٹو- 2 نے اسی روز صبح 3 بج کر54 منٹ پر دوبارہ کام شروع کیا۔

 چھانگ ای-4  تحقیقاتی مشن چاند پر شمسی توانائی کی کمی کی وجہ سے چھا جانے والی  قمری رات کے دوران غیر فعال حالت میں چلاجاتا ہے جسے چاند پرپہنچے ہوئے825 زمینی دن ہوچکے ہیں۔چاند کا ایک دن زمین کے 14دن کے برابر ہے اسی طرح قمری رات کا دورانیہ بھی اتنا ہی ہے۔

چاند کے شمال مغرب میں اپنے اترنے کے مقام سے چھانگ  ای-4 تقریباً682.8 میٹرکا سفر کرچکا ہے۔روور اوراس کے اترنے کے مقام کے درمیان خطی فاصلہ تقریباً455 میٹر ہے۔

 اپنے 29 ویں قمری دن کے دوران ، روور  اپنے موجودہ مقام سےشمال مغرب میں تقریباً1.2 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع آتش فشانی لاوے پرمشتمل علاقے کی جانب سفر جاری رکھے گا۔