چینی صدر اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کی ویڈیو کانفرنس

چینی صدر شی جن پھنگ نے دارالحکومت بیجنگ میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گتریس سے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے تبادلہ خیال کیا۔(شِنہوا)

بیجنگ(شِنہوا) چین کے صدر شی جن پھنگ اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گتریس نے ویڈیو کانفرنس کے ذریعے تبادلہ خیال کیا۔

شی نے بین الاقوامی برادری سے کثیرالجہتی کے لئے اپنی حمایت اور اقوام متحدہ کے منشور کی پاسداری کے لئے اپنے عزم کا اعادہ کرنے کا مطالبہ کیا۔

اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ کوویڈ-19 تاحال دنیا میں اپنی تباہ کاری جاری رکھے ہوئے ہے صدر شی نے کہا کہ اس وبا کے خلاف لڑائی میں چین اقوام متحدہ کے نظام خصوصاً عالمی ادارہ صحت کی مرکزی قیادت کی بھرپور حمایت کرتا ہے۔

شی نے مزید کہا کہ ان کا ملک کوویڈ-19 سے بچاؤ اور اس کی روک تھام کے لئے بین الاقوامی تعاون کو مضبوط بنانے کے لئے اقوام متحدہ کے نظام کی بھی بھرپور حمایت کرتا ہے۔

چینی صدر نے کہا کہ چین ویکسین کی تیاری کا کام مکمل اور اسے استعمال میں لانے کے بعد کوویڈ-19 ویکسین کو دنیا بھر کے فائدے کی  چیز بنانے کے اپنے وعدے کو پورا کرے گا۔

شی نے کہا کہ چین ترقی پذیر ممالک میں ویکسین تک رسائی اورسستے نرخوں پر دستیابی کو یقینی بنانے میں معاونت کرے گا۔

وبا کے دوران پیدا ہونے والے بہت سے نئے مسائل کا ذکر کرتے ہوئے شی نے کہا کہ یہ مسائل امن یا ترقی کو کسی نہ کسی طرح سے متاثر کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کو اجتماعی سیکیورٹی میکانزم  اور سلامتی کونسل کے مستقل ارکان کو مثالی کردار ادا کرنا چاہئے۔

چینی صدر نے مزید کہا کہ یکطرفہ پن کی پیروی اور تسلط  جمانے کی خواہش غیرمقبول ہیں جنہیں  لازمی طور سے مسترد کردیا جائے گا۔