اسلامی تعلیمات سے متاثرامریکی سیاح نے امام کعبہ کے ہاتھوں اسلام قبول کرلیا

مکہ المکرمہ (آئی این پی )میامی سے تعلق رکھنے والے امریکی سیاح اسٹیو نے مکہ مکرمہ میں امام کعبہ شیخ ڈاکٹر عبد الرحمن السدیس کے ہاتھوں اسلام قبول کر لیا۔ اسٹیو نے مکہ مکرمہ میں شیخ السدیس سے ملاقات کی اور کلمہ شہادت پڑھ کر اسلام قبول کرنے کا اعلان کیا اور مسلمان ہو جانے پر بے حد خوشی کا اظہار کیا۔
بین الاقوامی امریکی سیاح نے اللہ کا شکر ادا کرتے ہوئے کہا کہ شیخ السدیس اور دیگر کا مشکور ہوں جنہوں نے مجھے اسلامی تعلیمات کا درس دیا اور میرا دل ایمان کیلئیکھول دیا۔شیخ السدیس نے کہا اب میں اور نو مسلم اسٹیو دونوں اسلام میں بھائی ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ اسٹیو کے ذہن پر دائمی اثرات در اصل اسلام کی پاکیزگی اور یہ اللہ تعالی کی وحدانیت کی عمدہ تعلیمات تھی۔
مزید برآں ، انہوں نے بتایا کہ کس طرح اسٹیو مملکت کے اندر مختلف عقائد کے لوگوں میں رواداری اور پرامن بقائے باہمی کی سطح سے انتہائی متاثر ہوا تھا۔ اسٹیو کے اس دورے کے دوران جن اہم اسلامی عوامل کا کردار تھا ان میں پر امن ہمسائیگی کے آداب، رواداری، بھائی چارہ اور سعودی مہمان نوازی تھے۔
اسٹیو ، جو میامی میں سیاحت کے شعبے میں کام کرتا ہے ، اپنے کچھ قریبی دوستوں کے ہمراہ سعودی شہر ابھا کے سیاحتی دورے پر تھا جہاں شیخ السدیس بھی اسی مقام پر موجود تھے۔ امام کعبہ کے پوچھنے پر بتایا گیا کہ ان کے پڑوس میں ایک امریکی سیاح رہ رہا ہے جس سے انہوں نے ملاقات کی اور آب زمزم ،کھجوریں اور سعودی کافی بطور تحفہ دیئے۔
امام کعبہ کے مترجم المطافی نے کہا کہ اسٹیو اسلام کے بارے میں مزید جاننے میں گہری دلچسپی کا مظاہرہ کرتے تھے اور اسلامی تعلیمات کے بارے میں کتابیں پڑھتے رہتے ہیں۔ اسٹیو کے ساتھ اپنی گفتگو کے دوران ، امام کعبہ نے متعدد قرآنی آیات کا حوالہ دیا جس میں مسلمانوں کو اپنے پڑوسیوں کے ساتھ اچھے سلوک اور ایک دوسرے سے متعلق حقوق کا حکم دیا گیا ہے۔ انہوں نے خاص طور پر حضرت محمد مصطفی صلی اللہ علیہ وسلم اور یہودی خاتون کی کہانی کا ذکر کیا جو ہمارے پیارے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم پر کوڑا پھینکا کرتی مگر حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم غصے سے رد عمل ظاہر کرنے کے بجائے مہربانی کا مظاہرہ کیا کرتے۔ جب ایک دن نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو معلوم ہوا کہ پڑوسی بیمار ہے ، تو وہ اس پڑوسی عورت کی عیادت کے لئیے گھر تشریف لے گئے ۔ یہ ہم سب کے لئے ہمسایہ ممالک کے حقوق سے متعلق ایک انمول زندگی کا سبق ہے، اسٹیو یہ واقعات سن کر آبدیدہ ہوتا رہا۔
اسٹیو نے کہا کہ انصاف پسندی ، رواداری ، ہمدردی ، اور رحم کی اسلامی تعلیمات نے انہیں بہت متاثر کیا۔ انہوں نے ملک کے 2030 وژن کی بھی تعریف کی۔
بعدازاں ، شیخ السدیس نے میزبان اسٹیو کو مکہ مکرمہ میں عمرہ کرنے اور مدینہ میں مسجد نبوی صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی زیارت کا مشورہ بھی دیا۔