چینی دارالحکومت میں جنگلی حیات کے تحفظ کیلئے نئے ضوابط پر عمل شروع

نقل مکانی کرنے والے پرندوں نے بیجنگ کے نواح میں دلدلی زمین پر پڑاؤ ڈالا ہواہے۔(شِنہوا)

بیجنگ(شِنہوا) چین کے دارالحکومت بیجنگ میں جنگلی جانوروں کے تحفظ کیلئے نئے ضوابط پر سوموار کے روز سے عمل درآمد شروع ہو گیا ہے۔

بیجنگ کے گارڈننگ وگریننگ بیورو کے مطابق ضوابط کے تحت دارالحکموت میں پورا سال شکار پر پابندی ہوگی اور غیر قانونی سرگرمیوں پر سزاؤں میں اضافہ کیاجائے گا۔

بیورو کے ایک اہلکار ژانگ ژی مِنگ نے کہا کہ جنگلی حیات کے تحفظ کیلئے یہ بیجنگ کی تاریخ کا سخت ترین مقامی قانون ہے جو شہر میں جنگلی حیات کے تحفظ کی مضبوط ضمانت فراہم کرے گا۔

اگر جانور ریاست کے خصوصی تحفظ میں ہیں تو شکاری کو شکار کئے گئے جانور کی قیمت سے 5سے 20گنا زیادہ جرمانہ کیا جائے گا۔ شکاری اگر کچھ بھی نہیں پکڑتے تو بھی وہ5ہزار یوآن(تقریباً 700امریکی ڈالر) سے زائد اور 20ہزار یوآن سے کم جرمانے کا سامنا کریں گے۔

اس کے علاوہ ضوابط میں اہم ماحولیاتی، سائنسی اور سماجی اقدار کے ساتھ زمینی جنگلی حیات کا تحفظ اور جنگلی حیات کی رہائش گاہوں کا تحفظ مضبوط کرنا بھی شامل ہے۔